Majeed Malik

جموں کشمیر تاریخی لحاظ سےآپ کےوطن کی شناخت ہے صدر لبریشن لیگ

میرپور( )آپ نوجوان طلبا وطالبات کے لیے ماضی کی نسبت تابناک مستقبل منتظرہے۔آپ نے ذہانت اور محنت کو بروئے کار لا کر عالمی سطح پر ناصرف برابری کی سطح پر بلکہ امتیازی حیثیت سے اپنی پہچان اور شناخت منوائی ہے۔جس طرح آپ کا وطن قدرتی حسن وجمال میں دنیا میں لاثانی ہے اس میں قدرت نے وسائل کے خزینے فراہم کیے ہیں۔اسی طرح اس خوبصورت اور زرخیز دھرتی کے آپ باسیوں کو بہترین عقل ودانش ،ذہانت ،ہنر وکسب، خدوخان ، شکل وصورت سے نوازا ہے آپ نے محنت اور جدوجہد کی کسوٹی پر پورا اتر کر آزاد اقوام کی صف میں اعلی اقدار ،عزت ، وقار ،احترام واحتشام کی سند حاصل کر کے انسانیت کی فلاح ، دنیا میں کدورتوں اور عدم انصاف کی اصلاح کر کے اپنی قوم ، اپنے وطن اور اسلاف کا نام روشن کرنا ہے یہ آپ کی راہ اور یہ منزل ہے۔جموں کشمیر جو تاریخی لحاظ سے آپ کے وطن کی شناخت ہے دنیا کے جغرافیہ میں عالمی اقوام کی مفاداتی اجارہ داری کی دوڑ میں اعلی مرکزی اہمیت کا حامل ہے ۔ماضی کے تسلسل میں حالیہ چین پاکستان اقتصادی ،صنعتی ، تجارتی منصوبوں کے اشتراک میں چائینہ پاکستان کوریڈور کے قیام میں عالمی دلچسپی کا مرکزبن گیا ہے۔ مستقبل قریب میںیہ خطہ تعمیر وترقی کے اعلی زینہ پر ہو گا۔اس نئے علاقائی اشتراک میںآپ کا کردار بہت اہمیت کا حامل ہو گا۔ جسٹس عبدالمجید ملک صدر لبریشن لیگ نے ایک پرائیویٹ تعلیمی درسگاہ میں ہونہار اور قابل طلباو طالبات میں انعامات اور اعلی اہلتی سندوں کو سپرد کرنے کی بڑی اجتماعی تقریب میں درسگاہ کے عملہ کی کاوش اور طلباء کی امتیازی پوزیشن حاصل کرنے میں ان کی محنت اور علمی لگن کو تحسین پیش کی۔ انھوں نے طلباء کو متوجہ کرنتے ہوئے مستقبل میں ان کے قومی فرائض اور ذمہ داریوں کی نشاندہی کرتے ہوئے جدوجہد آزادی میں لاکھوں شہداء کی قربانی اور ان کے مشن کی مفصل نشاندہی کی اور تاکید کی گو کہ جموں کشمیر کے عوام کو پاکستان کے عوام کی جدوجہد آزادی میں بھرپور حمایت رہی ہے اور آج بھی اخلاقی ، سیاسی اور سفارتی حمایت کا اعادہ کیا جاتا ہے اور اقوام متحدہ کو رسمی طور پر جموں کشمیر کے عوام کے حق خود ارادیت پر عمل پیرا ہونے کی یاد دہانی بھی کرائی جاتی ہے ۔ جیسا کہ وزیراعظم پاکستان نے بانکی مون سیکرٹری جنرل کے ساتھ تاجکستان میں حالیہ ملاقات میں بھی نشاندہی کی مگر زمینی حقائق اس بات کے منافی ہیں کہ مقبوضہ کشمیر کی طرح آزادکشمیر کے عوام یکجہتی قائم کر کے آزادی کی تحریک میں کلیدی کردار ادا کریں۔جسٹس مجید ملک نے دنیا کی آزادی کی تحریکوں کے تناظر میں فلسطین کی مثال دی اور کہا کہ فلسطین کے عوام اپنی آزادی کی آخری منزل کے قریب ہیں یورپ ان کی ریاست کو تسلیم کر لیا ہے ۔عالمی عدالت اور اقوام متحدہ میں رکنیت اور مبصر کی حیثیت حاصل ہو چکی ہے جب کہ جموں کشمیر کی آزادی کی تحریک اعلان تاشقند ،معاہدہ شملہ ،اعلان لاہور اور اسلام آباد کی شکل میں آزادی اور حق خود ارادیت کے حصول کی حقیقت اور حیثیت سے محروم ہو کر ہندوستان پاکستان کی حکومتوں کی صوابدید اور سہولت کے تابع دو طرفہ مذاکرات کی سرکریک کے تنازعہ کی طرح زمینی تنازعہ کی حیثیت میں محتاج ہو کر رہ گئی ہے۔اب یہ جموں کشمیر کے عوام پر بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ جدوجہد آزادی حقیقی نصب العین پر واپس لائیں۔انھوں نے نوجوانوں سے کہا کہ آپ نے مستقبل میں قومی سربراہ،صدر ، وزیراعظم ،چانسلر ،وائس چانسلر ، جج اور چیف جسٹس بننا ہے لہذا ابھی سے اپنی تربیت مستقبل کی ذمہ داریوں سے عہدہ برآہ ہونے کے احساس سے شروع کر دیں۔

Share this:

Related News

Comments are closed

Jobs: career@azadnews.co.uk
News: news@azadnews.co.uk
Enquiries: info@azadnews.co.uk
Tel: +44 7914314670 | 07588333181

Copyright 2015 © AZAD is a part of Indigo Marketing & Media Productions Ltd.
41 West Riding Business Center, BD1 4HR |08657270| England & Wales.